Verses

دل بہلنے کی شبِ غم یہی صورت ہوگی
آپ کی دی ہوئی تکلیف بھی راحت ہوگی

آپ کے درد میں بھی آپ کی سِیرت ہوگی
بات میں بات، نزاکت میں نزاکت ہوگی

آتشِ دوزخِ ہجراں ہے قیامت، لیکن
تم جو چاہو گے تو یہ بھی مجھے جنت ہوگی

جمع کرتی رہے آمادگی ذوقِ فنا!
کام آئے گی، اگر دل میں حرارت ہوگی

کہنے سُننے کی غمِ عشق میں حاجت ہی نہیں
آنکھ سے ٹپکے گی، دل میں جو محبت ہوگی

Theme by Danetsoft and Danang Probo Sayekti inspired by Maksimer